درویش شش پہلوی

قصہ چہاردرویش تو ہر ایک نے سن رکھاہوگا،،،،مگر قصہ درویش شش پہلوکسی نے نہ سناہوگا۔۔۔ ہم اپ کو ایک  شش پہلوی(رضاشاہ پہلوی نہیں)

درویش سے ملواتے ہیں جو خود بھی ملنے ملانے کا شوقین ہے ۔  ۔۔

اس درویش کا ایک پہلو تو وہی ہے جو ہرایک کا ہوتا ہے یعنی ‘‘وکھی’’۔۔۔ جو اکثر کھی کھی کرتے کرتے دوہری ہوتی پائی جاتی ہے ۔۔۔

دوسرا پہلو بطور بیٹے کا ہے جو ایک نہایت فرمانبردار اور ماں باپ کےلیےسوچنے والا ہے ۔۔ جس کی ہرسال کی پہلی پوسٹ ماں باپ کےلیے کچھ کرنے کے عزم کااظہار ہوتی ہے ۔۔ اور پھراللہ کی کرم نوازی سے وہ کربھی جاتا ہے ۔۔۔ اس پہلو کے لحاظ سے یہ درویش بالکل درویش ہی ہے ۔۔۔

درویش کا دوسرا پہلو ایک دوست کا جس میں یہ پھرسے ہمہ  پہلوشخصیت ہے ۔۔۔ یہ دوستوں کا دوست  بھی ہے اور بھائی بھی ۔۔ یہ بیک وقت ان کاٹیچر بھی ہے اور ان کاشاگرد بھی ۔۔ یہ بیک وقت لیڈر بھی ہے اور رعایابھی ۔۔۔یہ سمجھنے والا بھی ہے اورسمجھانے والا بھی ۔۔۔

 

تیسراپہلو اس کا وہ ہے جو کسی کسی کا ہی ہوتا ہے ۔۔ یعنی ملٹی ٹیلنٹڈ پروفیشنل ۔۔۔ یہ بیک وقت شاعر بھی ہے اور افسانہ نگار بھی ۔۔ یہ پروگراموں کے سکرپٹ بھی لکھتا ہے اور ناول بھی ۔۔۔ یہ سوشل میڈیاپربھی ایکٹو ہے اور الیکٹرونک میں بھی پس پردہ کرداراداکرتاہے  ۔۔۔بلاگر بھی ہے اور کالم نگار بھی۔اور تو اور مہم جو اتنا کہ ‘‘خودکش بمبار کےتعاقب میں’’بھی نکل جاتا ہے ۔۔۔

چوتھا پہلو اس کا شائد ‘‘نازک پہلو’’ ہے جس کاتذکرہ بھی خاصی نزاکت سے کرنا پڑیگا ۔۔۔ اس پہلو میں درویش ہمیشہ کسی ملنگنی اور اپنے پسندیدہ مشروب  سے شغل کرتا نظر آتا ہے ۔۔۔ اس ایک پہلوپرالگ سے تحریر لکھی جاسکتی ہے لیکن فی الوقت کےلیے اتنا کافی ہے ۔۔۔

پانچواں پہلو اس کا سیاسی ہے جس میں بھی یہ درویش خاصا نمایاں ہے ۔۔ درویشی کے باوجود ایک سیاسی اور ایک صحافتی تنظیم کاعہدیدارہونے کے ساتھ ساتھ درجنوں دوستی گروپوں کا روح رواں ہے ۔۔۔

چھٹا پہلو  اس کا وہ ہے جو صرف بٹوں کا ہوتا ہے ۔۔ یعنی چٹورا پن ۔۔۔۔ یہ درویش دعوت پہ بلانے اور دعوت اڑانے میں خاصی مہارت رکھتا ہے ۔۔کبھی یہ گوجرانوالہ جاکر مچھلی اڑاتا ہے تو کبھی یہ قصورجاکرنذرنیازکھاتا پایاجاتاہے ۔۔ کبھی یہ کسی سینئرکی ناشتے کی دعوت پہ جاکر ڈنرکےبعدنکلتا ہے تو کبھی یہ  شادی بیاہوں میں شاپرکےساتھ پکڑاجاتا ہے ۔۔۔چائے اور کافی تو اس کامن پسند مشروب ہے جو یہ صرف خاص دوستوں کے ساتھ ہی پیتا ہے

اس درویش کی درویشی کا ایک زمانہ معترف ہے ۔۔ دوست اسے پیر بھی کہتے ہیں اور اکثرتعویذ مانگتےنظر آتے ہیں ۔۔ یہ درویش  بھی اکثر چلہ کشی میں مصروف رہتا ہے جس  کےثبوت گاہے گاہے اس کی فیس بک پہ نظرآتے ہیں ۔۔ درویش کی محفلیں بھی خاصی مقبول ہیں ۔۔ اس کا کوئی آستانہ نہیں مگر جس کے غریب خانے کو رونق بخشے وہاں ہی اس کا دربار سج جاتا ہے (بھلے اگلے کاکباڑا ہوجائے)۔۔۔ اس درویش کی جتنی بھی تعریف کی جائے کم  ہے لہذا زیادہ لکھنے کا بھی کوئی فائدہ نہیں ۔۔ امید ہے اس درویش سے اپ کی اچھی خاصی شناسائی ہوگئی ہوگی،باقی جوتشنگی رہتی ہے اس کےلیے اپ کو اسے تلاش کرکے اس کی بیعت کرنی ہوگی ۔۔۔۔ ہم یہاں نام نہیں لکھ رہے لیکن امید ہے کہ اپ سب سمجھ گئے ہونگے کہ یہ ذکرکس شش پہلوی درویش کا ہورہا ہے ۔۔۔۔۔ اب اجازت دی جئے اور کمنٹ میں اپنےتبصرے کیجئے

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s